Embed HTML not available.

جھوٹ کی دیوار

جہاں آج کل امریکہ میں صدارتی الیکشن موضوعِ گفتگو ہیں وہیں دورانِ گفتگو جھوٹ کی دیوار کا ذکر بھی ضرور آتا ہے۔ جھوٹ کی دیوار دراصل امریکہ کی کاؤنٹی مین ہٹن کی مرکزی شاہراہ پر مصوری اور آرٹ سے وابستہ کچھ افراد نےتعمیر کی ہے۔ 100 فٹ طویل اس دیوار پر صدر ٹرمپ کے آغاز اقتدار سے اب تک کے کیے گئے 20 ہزار سے زائد جھوٹے دعوےاور حقیقت سے عاری بیانات کو رنگین کاغذوں پر لکھ کر دیوار پر چسپاں کیا گیا ہے۔گو کہ گذشتہ دنوں ٹرمپ کے حامیوں نے اس دیوار کو نقصان پہنچانے کی پوری کوشش کی تھی لیکن اس کے باوجود لوگوں کی بڑی تعداد اس دیوار کو دیکھنے کے لیے مسلسل آرہی ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ دیکھنے والوں میں ایسے اپوزیشن لیڈر، اداروں کے سربراہ اور ایسے بزنس مین بھی شامل ہیں جن کے بارے میں ٹرمپ نے کبھی کوئی بات کی ہو جو کہ غلط ثابت ہوئی ہو ۔ ان 20 ہزار بیانات کو مختلف عنوانات میں بانٹا گیا ہے اور ہر ایک عنوان کو ایک مخصوص رنگ دیا گیا ہے تاکہ پڑھنے والوں کو تلاش کرنے میں آسانی ہو۔امریکہ میں ہونے والے انتخابات کے مکمل نتائج ابھی آنے باقی ہیں اور اب تک نتائج کے مطابق ٹرمپ کی حکومت جاتی ہوئی نظر آرہی ہے ۔ سوچنا یہ ہے کہ کیا ٹرمپ کے چلے جانے کہ بعد یہاں آنے والوں میں اضافہ ہو گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں