Embed HTML not available.

سویڈن ایک فلاحی مملکت

سویڈن کا فلاحی نظام کئی تنظیموں اور نظاموں پر مشتمل ہے۔ جس کی مالی اعانت زیادہ ترٹیکس کے ذریعے ہوتی ہے اور حکومتی سطح پر تمام سرکاری شعبوں کے ساتھ ساتھ عوامی شعبوں میں نجی تنظیموں کے ذریعے عمل درآمد ہوتا ہے۔ جب آپ سویڈش فلاحی نظام میں داخل ہوتے ہیں تو آپ اس کا حصہ بن جاتے ہیں، جسے دنیا کا بہترین سوشل سکیورٹی سسٹم کہا جاتا ہے ۔ مکمل طور پر ایسا کہنا مناسب نہیں کیونکہ اس نظام میں بھی بہتری کی گنجائش موجود ہے۔
اردو قاصد کی اس سیریز میں آپ جان سکیں گے کہ سویڈن کا سماجی ، فلاحی نظام کیسے کام کرتا ہے اور آپ اس سے سماجی فوائد کیسے حاصل کر سکتے ہیں۔
سویڈن کے اس نظام کو تین مختلف وزارتوں کے تحت تین حصوں میں الگ کیا جاسکتا ہے۔
جیسے کہ
سماجی بہبود ، وزارت صحت و سماجی امور کی ذمہ داری ہے۔
تعلیم ، تعلیم اور تحقیق کی وزارت کی ذمہ داری ہے۔
روزگار، وزارت روزگار کی ذمہ داری ہے۔
آئیے جانتے ہیں سویڈن کی وزارت صحت وسماجی امور کے بارے میں
سویڈن میں فلاح و بہبود کی ذمہ داری وزارتِ صحت اور سماجی امور کی ہے۔ جس میں بیماری کی صورت میں مالی تحفظ، بزرگوں اور فیملی کے لیے سماجی خدمات، صحت کی نگہداشت، صحت اور بچوں کے حقوق کو فروغ دینا، معذور افراد کے لیے انفرادی مدد اور قومی معذوری کی پالیسیوں میں ہم آہنگی فراہم کرنا شامل ہے۔
سویڈن میں صحت و نگہداشت کا نظام یقینی بناتا ہے کہ تمام شہریوں کو صحت کی دیکھ بھال کی خدمات تک یکساں رسائی حاصل ہو۔ سویڈن کو 290 بلدیات اور 21 علاقائی کونسلوں میں تقسیم کیا گیا ہے۔ اس نظام کے انتظامی اختیارات کی ذمہ داری علاقائی کونسلوں اور کچھ معاملات میں مقامی کونسلوں یا بلدیاتی حکومتوں پر عائد کر دی گئ ہے۔ اس کو باقاعدہ یقینی ہیلتھ اینڈ میڈیکل سروس ایکٹ کے ذریعہ بنایا جاتا ہے۔ مرکزی حکومت کا کردار قوانین اور رہنما اصول کا قیام ، اور صحت اور طبی نگہداشت کے لئے سیاسی ایجنڈا طے کرنا ہوتا ہے۔علاقائی کونسل کے نمائدے سیاسی کارکنا ن ہوتے ہیں جو کہ ہر چار سال بعد قومی عام انتخابات کے ذریعے منتخب ہوتے ہیں۔
مقامی اور علاقائی ذمہ داریاں
سویڈش پالیسی کے مطابق اچھی اور معیاری صحت اور طبی نگہداشت مہیا کرنا علاقائی کونسل کی ذمہ داری ہے ، اور پوری آبادی کے لئے بہترین صحت کے فروغ کے لئے کام کرنا بھی علاقائی کونسل کی ذمہ داری میں شامل ہے۔ 23 سال کی عمر تک شہریوں کے دانتوں کی دیکھ بھال کے اخراجات بھی علاقائی کونسلیں پورا کرتی ہیں۔ گھر میں یا خاص رہائش گاہوں میں بوڑھوں کی دیکھ بھال بلدیات کے ذمہ آتی ہے۔ ان کے فرائض میں جسمانی معذوری یا نفسیاتی عارضے میں مبتلا افراد کی دیکھ بھال اور اسپتال کی دیکھ بھال سے صحتیاب ہونے والے افراد کے ساتھ ساتھ اسکول کی صحت کی دیکھ بھال کے لئے مدد اور خدمات فراہم کرنا بھی شامل ہے۔
سویڈن میں کوئی بھی مریض ، 12 ماہ کے دوران کبھی بھی طبی مشاورت، علاج معالجے کی مد میں مجموعی طور پر 1150 سویڈش کرونا اور دوائیوں کی مد میں 2350 کرونا سے زیادہ رقم ادا نہیں کرتا، اس رقم سے زائد کی تمام طبی خدمات اور ادویات مفت فراہم کی جاتی ہیں۔
اگلی ویڈیو میں ہم سوشل سکیورٹی کے بارے میں بات کریں گے ، اگر آپ کو یہ سلسلہ پسند آیا ہے تو، ویڈیو کو لائک اورشیئر کیجیئے گا اور اپنی رائے سے ہمیں آگاہ ضرور کیجیئےگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں