سکھ مذہب کے بانی اور روحانی پیشوا بابا گرونانک کے 550ویں جنم دن کی تقریبات میں شرکت کے لیے لگ بھگ 500 بھارتی سکھ یاتری ننکانہ صاحب پہنچ گئے ہیں۔
دفتر خارجہ سے جاری بیان کے مطابق آج صبح 500 بھارتی سکھ یاتریوں پر مشتمل خصوصی وفد واہگہ بارڈر کے ذریعے پاکستان پہنچا۔
سکھ یاتری بابا گرونانک کے 550ویں جنم دن کی تقریبات میں حصہ لیں گے جن کا آغاز یکم اگست سے ہو رہا ہے۔

دفتر خارجہ سے جاری بیان کے مطابق نئی دہلی میں واقع پاکستانی ہائی کمیشن نے 26 جولائی کو سکھ یاتریوں کو ویزے جاری کیے تھے۔ بیان کے مطابق ’پاکستان کے لیے اعزاز ہے کہ بھارتی سکھ یاتریوں کی جانب سے بابا گرونانک کے 550ویں جنم دن کی تقریبات کا آغاز ننکانہ صاحب سے ہو رہا ہے‘۔

دفتر خارجہ نے کہا کہ ’حکومت پاکستان مذہبی مقامات پر دوروں اور پاکستان اور بھارت کے عوام کے درمیان رابطوں کو فروغ دینے کی پالیسی پر بھی یقین رکھتی ہے‘۔
یاد رہے کہ گزشتہ روز وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ مجھے ننکانہ صاحب اور کرتارپور کی اہمیت کے بارے میں اندازہ نہیں تھا، تاہم ہم نے انہیں سہولیات فراہم کرنے کا آغاز کردیا ہے اور گرونانک کی 550ویں سالگرہ پر پوری سکھ برادری کو سہولیات فراہم کریں گے۔

سویڈن، پولینڈ اور کینیڈا میں مقیم سکھ برادری، سکھ مذہب کے بانی اور روحانی پیشوا بابا گرونانک کے 550ویں جنم دن کی تقریبات میں شرکت کے لیے حضور صاحب ٹورز سے رابطہ کر سکتے ہیں. مزید معلومات کے لیے نیچے دی گئی ویب سائٹ پر کلک کریں.
hazoorsahibtours