102

“مغربی جدّت پسندی”

“بھئی کل بڑے عرصے کے بعد عمدہ ماوے کے لڈو کھائے، فضل کے گھر سے جو آئے تھے۔” انیس مرزا بولے۔
“جی ہاں! گلی کے تمام ہی گھروں میں بانٹی ہے۔ بھلا بتائیں! لڑکی کی پیدائش پر کون اتنی مہنگی مٹھائی بانٹتا پھرتا ہے اور وہ بھی چوتھی لڑکی کی پیدائش پر۔” رفیق الدین صاحب منہ بنا کر طنزیہ بولے۔
” صحیح کہا آپ نے حضرت! یہ سب چونچلے مغربی جدّت پسندی کے اثرات کا نتیجہ ہیں بس اور کیا!” اشرف صاحب نے بھی لقمہ لگایا۔
محلے کے بزرگوں کے درمیان چپ چاپ بیٹھا جواں عمر ریحان مسکرا کر بولا۔ ” آپ لوگ شاید بھول گئے ہیں کہ یہ مغرب کا نہیں بلکہ ہمارے نبی صلیٰ اللہ علیہ و آلہ وسلم کی تعلیم کا اثر ہے کہ بیٹی رحمت ہے، جس کی پیدائش والدین کے لئے بہشت کے دروازے کھولنے کا سبب بنتی ہے۔ تو بزرگوں! ایسی عظیم رحمت پانے کی خوشی منانا فضل صاحب کیا ہر بیٹی کے باپ کا حق ہے۔”

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں