Embed HTML not available.

گزرا سال 2020

یوں تو ہر گزرا سال اپنے ساتھ زندگی کے نشیب و فراز کی مختلف داستانیں لے کر جاتا ہے۔ لیکن سال 2020 کچھ زیادہ ہی غیر معمولی تھا۔ سب سے پہلے تو اپنے دنوں کی تعداد کے حساب سے اور کچھ اپنے واقعات کے حساب سے۔
لوگوں کی ایک بڑی تعداد سال کے حوالے سے اپنے دل کی بھڑاس نکالتی ہوئی نظر آئی اور کچھ کے لیے یہ سال خوشیوں کا بھی باعث رہا۔کوئی اس سال کو منحوس ، خراب قرار دیتا رہا تو کوئی کچھ اور۔لیکن میری نظر میں سال خراب یا منحوس نہیں تھا بلکہ مشکل تھا۔سال کے اوائل میں کچھ غیر معمولی نقصانات کے خبروں سے سال کا آغاز ہوا اور سال کے آخر تک کچھ ایسا ہی سلسلہ چلتا رہا۔عالمی وبا نے پوری دنیا کو اپنے تابع کر لیا اور تقریباً 17- 18 لاکھ افراد کی جانوں کا نذرانہ وصول کیا اور یہ سلسلہ ابھی بھی جاری و ساری ہے اور اللّہ جانے کب تک چلے گا؟ دنیا بھر میں نا صرف جانی بلکہ معاشی نقصانات بھی ہوئے ۔مسلسل لاک ڈاؤن کی وجہ سے کئی ممالک معاشی بحران کا شکار بھی ہوئے ۔ سال 2020 میں جہاں دیگر اہم واقعات ہوئے وہاں امریکہ میں صدارتی الیکشن اور ٹرمپ کا صدر کی کرسی سے ہاتھ دھونے پر دھاندلی اور کیوں نکالا کا راگ کچھ سنا سنا سا محسوس ہوا۔ پاکستان کی سیاسی اور معاشی صورتِ حال بھی کافی اتار چڑھاؤ کا شکار رہی۔ انڈیا کے وزیر اور وزیرِ اعظم بھی اپنی اپنی سرگرمیوں کی وجہ سے کافی چرچے میں رہے۔۔سویڈن اور یورپ کے دیگر ممالک کے وزراء میں بھی قول و فعل کا تضاد نظر آیا۔
بالآخر سال2020 اپنی اچھے برے، کھٹے میٹھے جلووں کے ساتھ اختتام پذیر ہوا۔
ربِ تعالیٰ سے دعا ہے کہ سال 2021 ہم سب کے لیے خیر و عافیت لائے۔ آمین

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں