پناہ کے متلاشی

سویڈن پہنچنے سے پہلے
سیاسی پناہ کی درخواست دینے کے لیے آپ کو سویڈن یا سویڈش سرحد پر ہونا لازمی ہے. سویڈن آنے سے پہلے اور کسی بھی ملک میں سویڈش سفارت خانے میں سیاسی پناہ کی درخواست دینا ممکن نہیں ہے.
سویڈن کا امیگریشن بورڈ طے کرتا ہے کہ آپ سویڈن میں تحفظ کے حقدار ہیں یا نہیں. سیاسی پناہ کے حوالے سے سویڈش امیگریشن بورڈ کی ویب سائٹ پر کافی معلومات موجود ہے.

اگر آپ نے سویڈن آتے ہوئے کسی اور یورپی ملک میں پناہ کی درخواست جمع کرائی ہے
اگر آپ یورپ سے باہر کسی ملک سے بھاگ رہے ہیں تو آپ کو پہنچنے والے پہلے یورپی یونین ملک میں پناہ کے لئے درخواست دینا ہوگی۔ اس کی وضاحت ڈبلن ریگولیشن میں کی گئی ہے، جو یورپی یونین (EU) کے ممالک اور ناروے ، آئس لینڈ ، سوئٹزرلینڈ اور لِکٹنسٹین کے مابین ایک معاہدہ ہے۔

اگر آپ سویڈن میں سیاسی پناہ کی درخواست دیتے ہیں تو سویڈش امیگریشن بورڈ اپنی تحقیقات کا آغاز کرے گا.

  • کیا آپ کو  یورپی یونین کے کسی دوسرے ملک کا ویزا مل گیا ہے؟
  • کیا آپ کے پاس یورپی یونین کے کسی بھی ملک اور کسی بھی قسم کا ریزیڈنٹ پرمٹ ہے؟
  • کیا آپ نے سویڈن آتے ہوئے کسی اور یورپی ملک میں پناہ کی درخواست جمع کرائی ہے؟

مزکورہ بالا میں سے کسی بھی سوال کا جواب اگر ہاں ہے، تو سویڈن وہ ملک نہیں ہے جہاں آپ پناہ کی درخواست جمع کرا سکتے ہیں۔ آپ کو اس ہی ملک میں واپس جانا ہوگا جس ملک کا ویزا، ریزیڈنٹ پرمٹ یا جہاں آپ نے سیاسی پناہ کی درخواست جمع کرائی ہے۔

تاہم، اگر سویڈن میں آپ کے قریبی رشتے دار مقیم ہیں تو پھر عین ممکن ہے کہ آپ کی پناہ کی درخواست کی جانچ پڑتال سویڈن میں ہو سکے۔

ڈبلن ریگولیشن کے ضوابط کے بارے میں امیگریشن بورڈ کی ویب سائٹ پر مزید پڑھیں۔

سویڈن پہنچنے کے بعد
آپ کو سویڈن پہنچنے کے بعد فوری طور پر سیاسی پناہ کی درخواست دینا ہوگی۔

سویڈن پہنچ کر جب آپ بارڈر پولیس سے ملتے ہیں

اگر آپ سویڈن میں داخل ہوتے وقت بارڈر پولیس سے ملتے ہیں تو آپ کو انھیں یہ بتانا ہوگا کہ آپ سیاسی پناہ کے لئے درخواست دینا چاہتے ہیں۔ مثال کے طور پر ہوائی اڈوں پر پاسپورٹ کنٹرول کے دوران،  یا فیری ٹرمینلز یا جہاں ٹرینیں اور بسیں سویڈش کی سرحد سے گزرتی ہیں وہاں سرحدی پولیس موجود ہوتی ہیں۔  بارڈر پولیس آپ سے کچھ سوالات کرنے کے بعد آپ کو امیگریشن بورڈ کے پاس بھیجیں گے، جہاں آپ کی درخواست جمع کی جائے گی۔

سویڈن پہنچ کر اگر آپ کا سامنا بارڈر پولیس سے نہیں ہوتا ہے

 سویڈن پہنچ کر اگر آپ کا سامنا بارڈر پولیس سے نہیں ہوتا ہےیا آپ پہلے ہی سویڈن میں ہیں تو آپ کو خود امیگریشن بورڈ سے رابطہ کرنا ہوگا۔

سیاسی بناہ کی درخواست کے لیے امیگریشن بورڈ کے دفاتر گوتھمبرگ، مالمو اور اسٹاک ہوم میں موجود ہیں۔ جبکہ وہ بچے جو والدین کے بغیر سویڈن پہنچ جاتے ہیں وہ اپنی درخواست بودن، نورشوپنگ، سندسوال، امیو، اپسالا اور اوریبرو میں جمع کرا سکتے ہیں۔ مائگریشن بورڈ کے مکمل پتہ کی تفصیل نیچے دیے گئے لنک سے حاصل کی جاسکتی ہے۔

امیگریشن بورڈ کے دفاتر کا پتہ جاننے کے لیے یہاں کلک کریں

ہر درخواست کی انفرادی طور پر جانچ پڑتال کی جاتی ہے

اس کا مطلب یہ کہ سویڈن امیگریشن بورڈ پناہ کی درخواست دہندگان کی درخواست کی وجوہات کی تحقیقات کرگے گا۔

درخواست جمع کراتے ہوئے آپ کو کیا کرنا ہے

  • اپنا نام، اپنی شہریت اور اپنے کنبے سے متعلق سوالات کے جوابات فارم میں پُر کریں۔
  • اپنی شناخت ثابت کرنے کے لیے اپنا پاسپورٹ یا کوئی بھی شناختی دستاویز جمع کرائیں۔
  • فنگر پرنٹس لیے جائیں گے، آپ کے انگلیوں کے نشانات کو جانچ پڑتال کے لیے استعمال کیا جاتا ہے کہ آیا آپ نے یورپ کے کسی دوسرے ملک میں پناہ کے لیے درخواست دی ہے، یا آپ کے پاس کسی اور یورپی ملک کا ویزا یا ریزیڈنٹ پرمٹ تو نہیں ہے یا آپ پر کسی یورپی ملک کی سفری پابندی تو نہیں ہے۔
  • امیگریشن بورڈ کو بتائیں کو آپ کون ہیں، مثال کے طور پر آپ نے اپنا وطن کیوں چھوڑا اور سویڈن کا سفر کیسے کیا۔
  • اگر آپ کے پاس ضروریات زندگی کے لیے پیسہ نہیں ہے تو مالی امداد کے لیے درخواست دیں۔ آپ کو ایک بنک کارڈ دیا جائےگا اور معلومات فراہم کی جائے گی کہ آپ کس مالی امداد کے لیے درخواست دے سکتے ہیں۔
  • سیاسی پناہ کے بارے میں مکمل معلومات حاصل کریں، اور اگلہ مرحلہ کیا ہے اور آپ کو کیا کرنا ہے یہ سب معلومات حاصل کریں۔
  • دیگر امور مثلاً رہائش، طبی سہولت کا حق، اور اپنے بچوں کے اسکول کی تعلیم کے بارے میں معلومات حاصل کریں۔

جب آپ درخواست جمع کرواتے ہیں

  • آپ کو ایک رسید دی جائے گی جو اس بات کا ثبوت ہوگی کہ آپ نے سیاسی پناہ کی درخواست دی ہے
  • امیگریشن بورڈ کا ایک کیس آفیسر اپکی درخواست اور فنگر پرنٹس کی جانچ پڑتال کرتا ہے۔ اس کے بعد کیس آفیسر فیصلہ کرتا ہے کہ آپ کی درخواست پر کتنی تحقیقات کی ضرورت ہے۔
  • آپ کے لیے سرکاری وکیل مقرر کیا جاسکتا ہے جس کا فیصلہ کیس آفیسر کرتا ہے۔
  • اگر آپ کی درخواست میں کوئی کمی ہے تو کیس آفیسر آپ سے رابطہ کرےگا۔

طویل انتظار

ہو سکتا ہے کہ آپ کی درخواست پر تحقیقات شروع ہونے سے پہلے آپ کو طویل انظار کرنا پڑے۔ آپ کی باری آنے امیگریشن بورڈ آپ کو ایک خط ارسال کرےگا۔ جس میں کیس آفیسر سے کب اور کہاں ملنا ہے اس خط میں بتایا جائےگا۔

بے حد ضروری ہے کہ آپ امیگریشن آفس کو اپنے موجدہ پتہ سے آگاہ رکھیں۔ اگر آپ منتقل ہو جاتے ہیں تو اپنے نئے پتہ سے امیگریشن کو مطلع کریں، تاکہ جب وہ خط آپ کو بھیجیں تو پتہ صحیح ہو۔

سیاسی پناہ کی تفتیش

سیاسی پناہ کی تفتیش ایک انٹرویو ہے جس میں آپ کیس افسر کو بتاتے ہیں کہ آپ کون ہیں اور آپ کیوں بھاگے۔ آپ کو یہ بھی کہنا پڑتا ہے کہ اگر آپ کو اپنے وطن واپس جانا پڑا تو آپ کے خیال میں آپ کے ساتھ کیا ہوگا۔

سیاسی پناہ کی تحقیقات کے دوران آپ کو سچ بتانا چاہئے۔ سیاسی پناہ کے لیے اپنی تمام وجوہات بیان کرنا آپ کی ذمہ داری ہے۔ آپ کو ایسی کوئی بھی چیز چھوڑنی نہیں ہے جو آپ کی سیاسی پناہ کی درخواست کے لئے اہم ہو۔ اگر آپ سچ نہیں کہتے ہیں ، یا اگر آپ اپنا بیان تبدیل کرتے ہیں تو ، اس سے آپ کی درخواست کی تشخیص متاثر ہوسکتی ہے۔ اگر آپ کے پاس اس بارے میں مزید دستاویزی ثبوت موجود ہیں جو آپ امیگریشن بورڈ کو دیکھنا چاہتے ہیں تو ، یقینی بنائیں کہ آپ اسے اپنے ساتھ تحقیقات میں لے کر جائیں۔

ایک بار جب پناہ کی تفتیش ہوجائے ، اور سویڈش امیگریشن بورڈ  نے اس کی تشخیص کرلی تو آپ کو اس بارے میں فیصلہ جاری کیا جائے گا کہ آیا آپ کی سیاسی پناہ کی درخواست منظور کی گئی ہے یا مسترد کردی گئی ہے۔

بچوں سے تفتیش

بچے کی پناہ کی درخواست کی الگ سے جانچ پڑتال ہوگی۔ بچوں کی پناہ کی درخواست کی بنیاد والدین سے مختلف ہو سکتی ہیں۔

وہ بچے جو اپنے والدین کے ساتھ مل کر سیاسی پناہ کے لئے درخواست دیتے ہیں ، اگر ان کے والدین اس کی منظوری دیتے ہیں تو وہ امیگریشن میں کیس آفیسر سے ملاقات کے مجاز ہیں۔ جب بچے کی پناہ مانگنے کی وجوہات کی جانچ کی جارہی ہو تو ، کیس آفیسر بچے کی عمر ، پختگی کی سطح اور صحت کی حالت کے مطابق انٹرویو کرتا ہے۔

انٹرویو میں بچہ کسی بالغ  جیسے،  والدین ، سرپرست یا  مشیر کو ساتھ لانے کا حقدار ہے۔ جو بچے بغیر والدین کے سویڈن پہنچے ہیں وہ ہمیشہ انٹرویو کے دوران اپنے مقرر سرپرست کو ساتھ لانے کے حقدار ہیں۔

ریزیڈنٹ پرمٹ حاصل کرنے کے امکانات جو  اثر انداز ہو سکتے ہیں؟

اگر آپ مہاجر یا ماتحت ادارہ کے تحفظ کے اہل ہیں تو آپ کو رہائشی اجازت نامہ (ریزیڈنٹ پرمٹ) دیا جاسکتا ہے۔

ہر سیاسی پناہ کی درخواست کی الگ سے جانچ پڑتال ہوتی ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ امیگریشن بورڈ سویڈن میں پناہ کے لئے درخواست دینے کے لئے آپ کی مخصوص وجوہات کی جانچ کرے گا۔ مثال کے طور پر ، اگر آپ ہم جنس پرست ، ابیلنگی یا ٹرانس ٹینڈر ہیں، تو امیگریشن بورڈ کو اس کو دھیان میں رکھنا ہوگا۔

آپ کو امیگریشن آفس کو بتانا ہوگا کہ آپ کون ہیں، آپ کیوں بھاگے اور آپ کے خیال میں کیا ہوگا اگر آپ کو اپنے ملک واپس جانا پڑا۔ اپنے اور اپنے حالات کے بارے میں جتنا ہو سکے بیان کریں ، چاہے ایسا کرنا مشکل محسوس ہو۔

یہ ضروری ہے کہ آپ سچ کہیں اور اپنا بیان تبدیل نہ کریں۔ یہ چیزیں آپ کے رہائشی اجازت نامے (ریزیڈنٹ پرمٹ) کے حصول کے امکانات پر اثر انداز ہو سکتی ہیں۔

مہاجر

کسی شخص کو مہاجر ماننے کے لیے کیا ضروری ہے یہ اقوام متحدہ کے مہاجر کنونشن میں واضح ہے۔ عام طور پر ایک مہاجر کو تین سالہ رہائش کا اجازت نامہ (ریزیڈنٹ پرمٹ) دیا جاتا ہے۔

اگر امیگریشن کی تشخیص یہ ہے کہ آپ کو مندجہ ذیل خوف میں سے ایک بھی لاحق ہے تو آپ کو مہاجر سمجھا جائےگا۔

  • نسل پرستی
  • قومیت
  • مذہبی یا سیاسی اعتقادات
  • صنف
  • جنسی رجحان
  • کسی خاص معاشرتی گروپ کی رکنیت

تحفظ کے اہل افراد

کسی فرد کو تحفظ کا اہل قرارد دینے کے لیے یوروپی یونین کے مشترکہ قوانین ہیں جس کے تحط کسی فرد کو تحفظ کا اہل سمجھا جاتا ہے۔ کسی فرد کو تحفظ کا اہل بننے کے لئے عام طور پر 13 ماہ کا رہائشی اجازت نامہ (ریزیڈنٹ پرمٹ) دیا جاتا ہے۔

آپ کو تحفظ کے لئے اہل قرار دیا جائے گا اگر امیگریشن بورڈ کا اندازہ ہو کہ آپ کو:

  • سزائے موت کی سزا سنائی گئی ہو
  • جسمانی سزا ، اذیت ، یا دیگر غیر انسانی یا فرسودہ سلوک یا سزا کا نشانہ بنایا گیا۔

  • فوجی نہ ہونے کے باوجود مسلح تصادم کی وجہ سے زخمی ہوئے ہوں.

دوسرے معاملات میں رہائشی اجازت نامہ (ریزیڈنٹ پرمٹ)
غیر معمولی معاملات میں ، سیاسی پناہ کے متلاشی افراد کو رہائشی اجازت نامہ (ریزیڈنٹ پرمٹ)دیا جاسکتا ہے یہاں تک کہ اگر ان کے بارے میں فیصلہ نہ کیا جائے کہ وہ مہاجرین یا ماتحت تحفظ کے اہل افراد ہیں۔

اس طرح کے معاملات میں خاص طور پر سنگین طبی حالت ہونا ، انسانی اسمگلنگ کا نشانہ بننا اور مجرمانہ تفتیش میں حصہ لینا شامل ہے۔

تحفظ کے حق سے مستثنیات
آپ سویڈن میں سیاسی پناہ کے اہل نہیں ہیں اگر آپ:

  • جنگی جرم کیا ہے۔
  • انسانیت کے خلاف جرم کیا ہے۔
  • کوئی اور سنگین جرم کیا ہے۔
  • سویڈن کی قومی سلامتی کے لئے خطرہ ہیں۔

اگر آپ کو اپنے آبائی ملک میں ہلاک یا ستایا جانے کا خطرہ ہے تو، آپ کو عارضی طور پر رہائشی اجازت نامہ دیا جاسکتا ہے یہاں تک کہ اگر آپ نے درج کردہ کسی بھی عمل کا ارتکاب کیا ہے۔

سیاسی پناہ کی درخواست جمع کرانے کے بعد کیا کریں

سیاسی پناہ کے متلاشی درخواستیں زیادہ ہونے کے باعث امیگریشن بورڈ کو وقت لگ سکتا ہے۔ آپ کی سیاسی پناہ کی تحقیقات شروع ہونے سے پہلے طویل انتظار کرنا پڑ سکتا ہے۔ انتظار کا دورانیہ ایک شخص سے دوسرے میں مختلف ہو سکتا ہے۔ ہر سیاسی پناہ کی درخواست مختلف ہے اور اس لیے اس بارے میں کوئی عام قاعدہ نہیں ہے کہ کسی درخواست کی تفتیش میں کتنا وقت لگتا ہے۔

طویل انتظار کے عرصے میں کیا کریں
آپ کو اپنی درخواست کے نتائج کی غیر یقینی صورتحال سے نمٹنا مشکل ہوسکتا ہے۔ طویل انتظار کے عرصے میں بہت سے لوگوں کو تکلیف کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ لیکن ایسی کچھ چیزیں ہیں جو آپ انتظار کرتے ہوئے کر سکتے ہیں جو آپ کو سویڈن میں قیام پذیر ہونے کی صورت میں مددگار ثابت ہوں گی۔

مثال کے طور پر آپ:

پناہ گزیروں کا کارڈ یا اسائلم سیکر کارڈ (LMA-Kort)

ایل ایم اے کارڈ کا مخفف ہے “lagen om mottagande av asylsökande” جب آپ سویڈن میں سیاسی پناہ کے لئے درخواست دیتے ہیں تو آپ کی تصویر لی جائے گی۔ بعد میں آپ کو امیگریشن آفس پناہ کے متلاشی کارڈ (LMA-kort) دیتا ہے۔

اسائلم سیکر کارڈ ایک پلاسٹک کارڈ ہے جس میں آپ کی تصویر ہے، اور یہ ظاہر کرتا ہے کہ آپ پناہ کے متلاشی ہیں۔ یہ شناختی کارڈ نہیں ہے، لیکن اس بات کا ثبوت ہے کہ آپ ایک پناہ کے متلاشی ہیں جس کو سویڈن میں رہنے کی اجازت ہے جب آپ اپنی درخواست کے فیصلے نہیں ہو جاتا۔

سیاسی پناہ کی درخواست جمع کرانے کے بعد جورسید آپ کو دی جاتی ہے، اسائلم سیکر  کارڈ ملنے کے بعد اس کو اس رسید کو سنبھالنے کی ضرورت نہیں ہوتی ۔ آپ کو ہمیشہ اسائلم سیکر کارڈ لے ساتھ لے کر جانا چاہئے۔ یہ خاص طور پر اہم ہے جب آپ ہسپتال وغیرہ جاتے ہیں، یا آپ کو دی گئی دواؤں کو خریدتے ہیں، کیونکہ جب آپ اپنے اسئلم سیکر کارڈ دکھاتے ہیں تو آپ کو کم قیمت ادا کرنا پڑتی ہے۔

کارڈ سے متعلق مزید معلومات امیگریش کی ویپ سائٹ پر پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں۔